آج اسلام آباد میں لاپتہ افراد سے متعلق کیس کی سماعت کرتے ہوئے چیف جسٹس افتخار محمد چوہدری کی سربراہی میں تین رکنی بنں نے وضاحت طلب کی کہ کس طرح دو لاپتہ افراد ہلاک ہو گئے۔


 

02 دسمبر 2013 (16:06)
0

سپریم کورٹ نے 33 لاپتہ افراد کو کل دن ساڑھے گیارہ بجے تک عدالت میں پیش کرنے کا حکم دیا ہے۔

یہ حکم چیف جسٹس افتخار محمد چوہدری کی سربراہی میں تین رکنی بنچ نے آج اسلام آباد میں لاپتہ افراد سے متعلق کیس کی سماعت کے دوران جاری کیا۔

بنچ نے کہا کہ متعلقہ حکام نے اعتراف کیا ہے کہ 33  لاپتہ افراد ان کی زیر حراست ہیں عدالت نے کہا کہ اگر لاپتہ افراد کو کل عدالت میں پیش نہ کیا گیا تو قانون اپنا راستہ خود بنائے گا۔

وزیر دفاع خواجہ آصف نے عدالت میں پیش ہو کر بتایا کہ حکومت لاپتہ افراد کو تلاش کرنے کے لئے پوری کوشش کر رہی ہے ۔ انہوں نے کہا کہ حکومت اس بات میں قانون سازی بھی کر رہی ہے۔

عدالت نے کیس کی سماعت کل تک ملتوی کر دی۔