روسی سفیر نے کہا کہ ٹھوس اقتصادی خطوط بالخصوص سرمایہ کاری اور تجارت کے لئے دوطرفہ تعلقات کا فروغ انتہائی ضروری ہے۔

اسحاق ڈار،امیگزی ویدوف کا پاک روس بین الحکومتی کمیشن کے اجلاس پر تبادلہ خیال
01 اکتوبر 2014 (21:45)
0

وزیر خزانہ سینیٹر اسحاق ڈار سے بدھ کو یہاں روسی فیڈریشن کے سفیر امیگزی ویدوف اور سفارتخانہ کے دیگر حکام نے ملاقات کی اور پاک روس بین الحکومتی کمیشن کے اجلاس کے بارے میں تبادلہ خیال کیا۔
روسی سفیر نے کہا کہ ٹھوس اقتصادی خطوط بالخصوص سرمایہ کاری اور تجارت کے لئے دوطرفہ تعلقات کا فروغ انتہائی ضروری ہے۔
دونوں ممالک نے اس توقع کا اظہار کیا کہ کمیشن کے اجلاس سے مجموعی اقتصادی تعاون کے حصول میں مدد ملے گی۔
روسی سفیر نے پاک روس بین الحکومتی کمیشن کے اجلاس میں شرکت کے لئے وزیر خزانہ کو دعوت دی۔
اس موقع پر دونوں ممالک کے درمیان ادائیگیوں اور واجبات کے معاملہ کے حل کے سلسلہ میں دیرینہ تجارتی مسئلہ کا بھی جائزہ لیا گیا۔
وفاقی وزیر نے کہا کہ اگرچہ یہ معاملہ بنیادی طور پر دونوں ممالک کی نجی شعبہ کی کمپنیوں کے درمیان ہے تاہم حکومت اس کے خوش اسلوبی سے حل کے لئے ہر ممکن سہولت دے گی۔
انہوں نے کہا کہ اس حوالے سے پاکستان اور روسی فیڈریشن کے درمیان اقتصادی تعاون کے فروغ میں رکاوٹ ہو رہی ہے اس لئے اس کا فوری حل وقت کی ضرورت ہے۔ وزیر خزانہ نے کہا کہ پاکستان توانائی کے منصوبوں میں غیر ملکی سرمایہ کاری کی حوصلہ افزائی کرتا ہے اور روس توانائی کے شعبہ میں اپنی فنی مہارت کے ہمراہ بھرپور تعاون کر سکتا ہے۔ انہوں نے توانائی کے شعبہ میں روس کی شرکت کا خیر مقدم کیا۔