نوازشریف نے کہا کہ اسلام آباد اعلامیہ ای سی او سربراہان کی بصیرت کا واضح اظہار ہے۔

وزیر اعظم کا ای سی او ممالک کے مابین باہمی تعاون مزید بڑھانے پر زور
01 مارچ 2017 (19:57)
0

وزیراعظم محمد نوازشریف نے سربراہ اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے خطے کو امن، ترقی اور خوشحالی کا گہوارہ بنانے کے لئے رکن ممالک میں زیادہ تعاون پر زور دیا۔
انہوں نے کہاکہ دیرینہ تنازعات کا پرامن تصفیہ اس عظیم مقصد کی تکمیل میں انتہائی معاون ثابت ہوگا۔
وزیراعظم نے کہا کہ خطے میں مثبت تبدیلی لانے کے لئے تجارت، ٹرانسپورٹ اور توانائی کے اہم شعبوں پر خصوصی توجہ دینے کی ضرورت ہے۔
نوازشریف نے کہا کہ ٹرانسپورٹ، بنیادی ڈھانچے اور روابط کے شعبوں میں بہتر تعاون کے بغیر خطے میں بامقصد تجارت نہیں ہوسکتی۔ خطے میں موثر تجارت اور ذرائع نقل و حمل کی راہداریاں ہمارے عوام کی اقتصادی ترقی اور خوشحالی کی ضامن ہوں گی انہوں نے کہا کہ سربراہ اجلاس کا موضوع علاقائی خوشحالی کے لئے روابط ہے جو خطے کے ممالک میں رابطوں کے منصوبوں میں بڑی سرمایہ کاری کے حوالے سے خصوصی اہمیت کا حامل ہے۔
وزیراعظم نے کہاکہ پاک چین اقتصادی راہداری ہی وہ واحد منصوبہ ہے جس سے روابط کے ذریعے تعاون کا پاکستان کانظریہ بہترین اندازمیں اجاگر کیا جاسکتا ہے یہ منصوبہ اب پورے جنوبی اور وسطی ایشیا میں توانائی ، بنیادی ڈھانچے ، ٹرانسپورٹ روابط اور تجارت کے اہم ترین منصوبے کے طور پر دیکھا جارہاہے۔
وزیراعظم نواز شریف نے کہا کہ اسلام آباد اعلامیہ اقتصادی تعاون تنظیم کے سربراہوں کی مشترکہ سیاسی بصیرت کا واضح اظہار ہے۔
انہوں نے کہا کہ سربراہ اجلاس کی طرف سے منظور کردہ ویژن دو ہزار پچیس کے لائحہ عمل پر عملدرآمد کے لئے عملی اور حقیقت پسندانہ اہداف مقرر کیے گئے ہیں۔
وزیراعظم نے کہا کہ رکن ممالک مختلف شعبوں میں روابط کے منصوبوں کی تیاری اور ان کے فروغ کیلئے مشترکہ کوششیں کریں گے جن میں بنیادی ڈھانچے کی ترقی اور توانائی کی بین العلاقائی راہداریاں شامل ہیں۔
نواز شریف نے کہا کہ سربراہ اجلاس کا کامیاب انعقاد تنظیم کے رکن ملکوں کی طرف سے اسے فعال علاقائی بلاک میں تبدیل کرنے کی خواہش اور عزم کا مظہر ہے۔
انہوں نے کہا کہ یہ خطے میں بامعنی ترقی اور مثبت تبدیلیوں کے مرکز کی حیثیت سے کام کرنے کیلئے پاکستان کے عزم کا ثبوت ہے۔