مقررین کا مقبوضہ کشمیر میں آبادی کا تناسب بگاڑنے کے بھارتی منصوبے پراظہار تشویش
01 جون 2016 (21:52)
0

اسلام آباد میں بدھ کے روز کشمیر کے بارے میں بین الاقوامی سیمینار میں مقررین نے عالمی برادری کویہ پیغام دیا گیاکہ وہ اپنے نا قابل تنسیخ حق، حق خودارادیت کے حصول کیلئے کشمیری عوام کی بے مثال جدوجہد پر زیادہ دیر تک خاموش نہیں رہ سکتی ۔
سیمینار کا اہتمام یونیورسٹی آف سائنس اینڈ ٹیکنالوجی میر پور نے کیا ہے جو کل بھی جاری رہے گا ۔
مقررین نے کہاکہ کشمیر اقوام متحدہ کے ایجنڈے پر موجود سب سے دیرینہ حل طلب تنازعہ ہے اور عالمی ادارہ کشمیر کے بارے میں کئی دہائیوں قبل منظور کی گئی اپنی متعدد قراردادوں پر عمل درآمد کرانے میں ناکام رہاہے۔
انہوںنے کہاکہ جنوبی ایشیامیں پائیدار امن وسلامتی کے قیام کیلئے کشمیریوں کی خواہشات کے مطابق مسئلہ کشمیر کاحل ناگزیر ہے ۔
انہوںنے مقبوضہ کشمیرمیں آبادی کا تناسب بگاڑنے کے بھارت کے منصوبوں پر شدید تشویش ظاہر کی۔ مقررین نے حریت رہنمائوں سید علی گیلانی، میرواعظ عمر فاروق اور محمد یاسین ملک کی گرفتاری اورگھروں میںمسلسل نظربندی کی شدید مذمت کی اور کشمیری شہداء کو زبردست خراج عقیدت پیش کیا۔
ادھربھارتی فوجیوں نے اپنی ریاستی دہشت گردی کی جاری کارروائیوں کے دوران گزشتہ ماہ میں 21بے گناہ کشمیریوں کو شہید کیا۔